Covid-19

میں رہنا پڑ سکتا ہے Protective Bubbles طلبا کو

بی بی سی (ویب ڈیسک )کے مطابق جب خزاں میں برطانیہ کے یونیورسٹی کیمپس دوبارہ کھل جاتے ہیں۔ طلباء کو “Protective Bubbles”کے چھوٹے چھوٹے گروپس میں رہنا پڑ سکتا ہے۔ تا کہ کرونا وائرس سے بچا جا سکے۔

 

یونیورسٹی رہنماؤں نے مشورہ دیا کہ طلباءانہی گروپس میں رہتے ہوئے مطالعہ کریں گے۔

وہ معاشرتی طور پر دور طلباء کی زندگی کے لئے حفاظتی اقدامات طے کررہے تھے – جس میں ورچوئل فریشر کا ہفتہ بھی شامل تھا۔


آن لائن سوئچنگ کی تعلیم کے ساتھ ، اور یونیورسٹیوں کے کیمپس کورونوائرس لاک ڈاؤن کے بعد سے بند کردیئے گئے ہیں ، اور ان کی نمائندہ تنظیم ، یونیورسٹیز یوکے یہ ترتیب دے رہی ہے کہ وہ کس طرح طلباء کو موسم خزاں کی مدت کے لئے واپس لاسکتے ہیں۔




مزید اس بارے میں یہ کوشش کی جارہی ہے کہ ایسی پروڈکٹیو حفاظتی سکرین بنائی جائے جس سے طلبہ کے
جرمز کا آپس میں تبادلہ نہ ہو سکے
ماہرین نے اس بات کا بھی خدشہ ظاہر کیا ہے کہ کرونا کیوبا لمبے عرصے تک جاری رہ سکتی ہے ایک مخصوص عرصے تک تو تعلیمی سرگرمیاں بند کی جا سکتی ہیں لیکن کچھ عرصہ گزرنے کے بعد ان کو حالات کے مطابق ہونے کے
لیے اس اوپیز کی تیاری کی جارہی ہے جس میں پروٹیکٹیو
مییئرز کی تیاری کی جارہی ہے تاکہ مستقبل میں یہ سرگرمیاں جاری کی جا سکے.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

error: Content is protected !!