Press conference

MINISTER EDUCATION PUNJAB PRESS CONFERENCE

GOVERNMENT OF PUNJAB SCHOOL EDUCATION DEPARTMENT

صوبائی وزیر برائے سکول ایجوکیشن پنجاب مراد راس کا لاہور میں اہم پریس کانفرنس سے خطاب
طلباء، اساتذہ کی زندگیاں سب سے اہم، ان حالات میں سکول کھولنے کی اجازت نہیں دے سکتے< حکومتی احکامات کے خلاف سکول کھولنے والوں کے خلاف سخت سے سخت ایکشن لیا جائے گا جب تک کرونا وائرس کی وجہ سے سکول بند رہیں گے تب تک سکول فیس میں 20 فیصد کمی کا ریلیف دیا جاتا رہے گا ان پرائیویٹ سکولوں کی تعداد انتہائی کم ہے جو ان مشکل حالات میں بھی سکول کھولنا چاہتے ہیں تمام والدین سے درخواست ہے کہ 20 فیصد کمی کے ساتھ وصول ہونے والے فیس واوچرز پر فیس فوری جمع کروائیں جن والدین کو فیس میں 20 فیصد کمی کے ساتھ فیس واوچر موصول نہیں ہوئے وہ قطعاً فیس جمع نہ کروائیں ہماری اولین ترجیح ہمارے بچوں اور اساتذہ کی زندگی کا تخفظ ہے< ماڈل سکولز منصوبے پر کام دوبارہ شروع کر دیا گیا ہے
پی سی ٹی بی کی تاریخ میں پہلی بار کتابوں کے حوالے سے شکایات سے نمٹنے کے لئے کنٹرول روم بنایا گیا ہے



Press conference
گلے چند ہفتوں کے دوران تمام طلبا میں کتابیں تقسیم کر دی جائیں گی
حکومت پنجاب کرونا وائرس سے بچاؤ کے لئے ہر ممکن اقدامات کر رہی ہے
پرائیویٹ اسکولوں کے حوالے سے محترم مرادراس صاحب نے یہ بھی کہا ہے کہ ان کو پھر وقت سکول کھولنے کی اجازت نہیں دی جا رہی صرف فیس کلیکشن اور اساتذہ کو تنخواہیں دینے کے لیے اسکول اوپن کرنے کی اجازت دی گئی ہ
یسے پرائیویٹ اسکول جو طلبہ سے فیس 2 کلیکٹ کر رہے ہیں لیکن معذرت اساتذہ کو تنخواہوں کی ادائیگی نہیں کر رہے ان کے لئے آج محکمہ سکول ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ پنجاب ایک ہیلپ لائن جاری کرے گا جو کہ آپ مختلف ٹی وی چینلز اور ہمارےپیج پر بھی شیئر کیاجائے گا اساتذہ کرام تنخواہ نہ ملنے کی صورت میں اس نمبر پر رابطہ کر کے اپنی شکایت درج کروا سکیں گے مزید وزیر تعلیم نے یہ بھی کہا کہ پنجاب بھر میں جتنے بھی پرائیویٹ سکول ہیں وہ بیس فیصد کٹوتی کے ساتھ والدین سے فیس لینے کے مجاز ہیں انہوں نے والدین سے بھی درخواست کی ہے کہ وہ ماہانہ بنیادوں پر اپنے بچوں کی فیس سکول میں جمع کروائیں تاکہ اسکول کے اخراجات تنخواہیں اور دیگر معاملات بخوبی چلائے جا سکے ایسے تمام پرائیویٹ اسکول جو طلبہ سے فیس تو لے رہے ہیں اور اساتذہ کو تنخواہیں نہیں جاری کر رہے متعلقہ ڈسٹرکٹ ایجوکیشن اتھارٹی کو احکامات بھی جاری کر دیئے گئے ہیں کہ ان سکولوں کے خلاف کارروائی کی جائے مزید ڈاکٹر مراد راس صاحب نے اپنی پریس کانفرنس میں یہ بھی بتایا کہ پنجاب گورنمنٹ کا فلوقت سکول کھولنے کا کوئی ارادہ نہیں ہے بلکہ اس صورتحال کو انہوں نے زندگی اور موت کے تناظر میں
بچوں اور اساتذہ کرام کی صحت کے ساتھ موازنہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہم ابھی ایسا کوئی رسک نہیں عملی طے کی جائے گ



اسکولوں کو کھولنے سے متعلق ایک سوال کے جواب میں انہوں نے یہ کہا کہ ہم نے ایک کمیٹی بنائی ہوئی ہے جو گزشتہ دو سے تین ہفتوں سے کام کر رہی ہے
اور روزانہ کی بنیاد کے اوپر ایسے معاملات کاٹھی کیے جارہے ہیں کہ پنجاب گورنمنٹ جب سکول کھولنے کا فیصلہ کرے تو کون سے پیسوں پیز اور ہدایات اسکولوں کو جاری کی کیے جائیں جن کے اوپر عمل کر کے بچوں اور اساتذہ کی صحت کی حفاظت کی جاسکے گی اوریہ رپورٹ مکمل ہوتے ہی منسٹری ایجوکیشن اور منسٹر ایجوکیشن پنجاب سے بھی شعر کی جائے گی انہوں نے یہ بتایا کہ ہم پرائیویٹ سکول کھولنا چاہتے ہیں لیکن حالات ایسے نہیں ہیں کہ ہم لوگوں کو اس کو کھولنے کی اجازت دے سکیں جب بھی گورنمنٹ آف پنجاب سکول کھولنے کا فیصلہ کرے گی ایک واضح طور پر نوٹیفکیشن جاری کیا جائے گا اور اس میں سو پلیز بھی واضح کئے جائیں گے

 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

error: Content is protected !!